Fri 18 Jm2 1435 - 18 April 2014
10436

عورت كے ليے پينٹ پہننے كا حكم

اس دور ميں پينٹ پہننے كا رواج بہت زيادہ ہو چكا ہے، آپ كى رائے ميں عورت كا پينٹ پہننا كيسا ہے ؟

الحمد للہ:

ہم يہ نصيحت كرتے ہيں كہ پينٹ نہ پہنى جائے، كيونكہ يہ كفار كا لباس ہے، اس ليے اسے ترك كر دينا چاہيے، اور عورت وہى لباس پہنے جو اس جنس كى دوسرى عورتيں اس كے ملك ميں لباس پہنتى ہيں، اسے ان عورتوں سے عليحدہ دوسرا لباس نہيں پہننا چاہيے.

اور عورت كو ساتر اور پورا پردہ كرنے والا لباس پہننا چاہيے جو تنگ نہ ہو، اور نہ ہى باريك ہو، بلكہ بغير كسى تنگى كے وہ سارے جسم كو چھپائے، اور نہ ہى بدن كا حجم ظاہر كرے، اور نہ ہى اس لباس ميں كفار سے مشابہت ہو، اور نہ ہى مردوں سے مشابہت ہوتى ہون اور نہ ہى وہ شہرت والا لباس پہنے.

ماخوذ از كتاب: مجموع فتاوى و مقالات متنوعۃ فضيلۃالشيخ علامہ عبدالعزيز بن عبد اللہ بن باز رحمہ اللہ ( 9 / 43 ).
Create Comments