Thu 24 Jm2 1435 - 24 April 2014
12654

نماز توپڑھتا ہے لیکن رمضان المبارک کےروزے نہیں رکھتاتوکیا وہ کفرکا مرتکب ہورہا ہے ؟

کیا روزے ترک کرنے والا کافر ہے اگرچہ وہ نماز کی پابندی بھی کرتا ہواور بغیر کسی عذر اورمرض کے روزے نہ رکھے ؟

الحمد للہ
جوبھی روزے کے وجوب کا انکار کرتے ہوئے روزے نہ رکھے وہ بالاجماع کافر ہے ، اورجوبھی سستی اورکوتاہی کی وجہ سے روزہ نہ رکھے توبعض اہل علم اسے کافر قرار دیتے ہیں ، لیکن صحیح یہی ہے کہ وہ کافر تو نہیں لیکن اسلام کا ایک رکن ترک کرنے کی وجہ سے وہ خطرے میں ہے کیونکہ اس نے ایک فرض ترک کیا ہے جس کی بنا پر وہ سزا کا مستحق ہے اورحکمران کی جانب سے اسے سزاملنی چاہیے تا کہ وہ اللہ تعالی کے ہاں توبہ کرتے ہوئے اس رکن پر عمل پیرا ہو ۔

واللہ تعالی اعلم ۔ .

دیکھیں : فتاوی اللجنۃ ( 10 / 143 ) ۔
Create Comments