Sun 20 Jm2 1435 - 20 April 2014
1745

کسی دوسرے کی جانب سے حج کرنے کا طریقہ اوراس میں حج کی قسم

کسی مرض کی بنا پرعاجز شخص یا پھر فوت شدہ کی جانب سے حج کرنے والے والے کے لیے حج کا طریقہ کیا ہے ، اورکیا اس کے لیے لازم ہے کہ حج تمتع یا افراد میں کوئي قسم اختیار کرے ؟

الحمد للہ
کسی کی جانب سے حج کرنے والا ( لبيك عن فلان ) کہے ، اورنائب کے لیے واجب ہے کہ وہ حج تمتع کرے کیونکہ حج تمتع افضل ہے ، اورہروہ انسان جسے کسی چيز میں وکیل بنایا جائے تواس پرافضل کی اتباع کرنی واجب ہوگی۔

لیکن جب اس کا مؤکل خود ہی اس کے خلاف اختیارکرلے ، اس لیے کہ وکیل کے پاس یہ امانت ہے اوراس پرواجب ہےکہ وہ زيادہ اچھا کام کرے ۔ .

لقاء الباب مفتوح لابن ‏عثيمین رحمہ اللہ تعالی ( 170 ) ۔
Create Comments