36637: خود توحج نہيں کیا لیکن والدین کےحج میں تعاون کررہا ہے


کیا کسی انسان کے لیے جائز ہے کہ پہلے خود حج کرنے کی بجائے اپنے والدین کوحج کے لیے بھیجے ؟

الحمدللہ

ہرآزاد ، عاقل بالغ اورحج ادا کرنے کی استطاعت رکھنے والے مسلمان شخص پرعمربھر میں ایک بارحج کی ادائيگي فرض ہے ، اوروالدین سے حسن سلوک اورنیکی کرنا اوران کی واجب کی ادائيگي میں حسب استطاعت معاونت کرنا مشروع ہے ۔

لیکن اگرآپ سب اکٹھے حج نہيں کرسکتے توآپ کوچاہیے کہ پہلے خود حج کریں اورپھراپنے والدین کا حج کرنے میں تعاون کریں ، اوراگرآپ پہلے والدین کوحج کروانے میں تعاون کرتے ہيں توان کا حج صحیح ہوگا ۔

اللہ سبحانہ وتعالی ہی توفیق بخشنے والا ہے ۔ .

دیکھیں : فتاوی اللجنۃ الدائمۃ للبحوث العلمیۃ والافتاء ( 11 / 70 ) ۔
Create Comments