Wed 16 Jm2 1435 - 16 April 2014
36990

کسی دوسرے کے خرچ پرحج کرنا

ایک عورت سعودی عرب آئي اورمیزبان کے خرچ پراسے فریضہ حج کی ادائيگي میسرہوگئي ، وہ پوچھتی ہے کہ آيا اس کے فرض کی ادائيگي ہوگئي ، اور حالت تویہ ہے کہ اس نے اپنے مال سے کوئي چيز بھی خرچ نہيں کی ؟

الحمدللہ

اس کے فریضہ حج کی ادائيگي کے صحیح ہونے پراس کا کوئي اثرنہیں کہ اس نے اپنے مال سے حج میں کچھ خرچ کیا ہے یا خرچ نہيں کیا بلکہ اس کے علاوہ حج کا بہت زيادہ خرچہ کسی اورنے برداشت کیا ہے ، تواس بنا پرہم یہ کہیں گے کہ اگر تواس کےحج میں شروط اورارکان واجبات مکمل طورپرپائے جاتے تھے تو اس کا فرض ادا ہوچکا ہے ، اگرچہ اس کا خرچہ کسی اورنے برداشت کیا ہو ۔

اللہ سبحانہ وتعالی ہی توفیق بخشنے والا ہے ۔ .

دیکھیں : فتاوی اللجنۃ الدائمۃ للبحوث العلمیۃ والافتاء ( 11 / 34 ) ۔
Create Comments