ar

128341: چوتھى بيوى كو طلاق دينے كى حالت ميں دوران عدت كسى اور عورت سے شادى كرنا


ايك شخص كى چار بيوياں ہيں، اس نے ان ميں سے ايك بيوى كو طلاق دے دى تو اور وہ چار بيوياں مكمل كرنا چاہے تو كيا طلاق شدہ بيوى كى عدت ختم ہونے سے قبل شريعت اسے شادى كرنے كى اجازت ديتى ہے ؟

Published Date: 2013-01-13

الحمد للہ:

اگر طلاق رجعى ہو، يعنى اسے اس طلاق سے دوران عدت رجوع كرنے كا حق حاصل ہو تو مسلمانوں كے اجماع كے مطابق وہ دوران عدت كسى اور عورت سے شادى نہيں كر سكتا؛ كيونكہ رجعى طلاق والى عورت بيوى كے حكم ميں ہوتى ہے.

ليكن اگر اس نے طلاق بائن دے دى ہو يعنى وہ آخرى طلاق تھى تو پھر پانچويں عورت سے نكاح ميں علماء كرام كا اختلاف ہے، ليكن احتياط اسى ميں ہے كہ عدت ختم ہونے تك وہ چوتھى عورت سے شادى مت كرے.

اللہ سبحانہ وتعالى سے دعا ہے كہ وہ سب مسلمانوں كو دين كى سمجھ عطا فرمائے، اور دين پر ثابت قدم ركھے، يقينا اللہ سبحانہ و تعالى اس پر قادر ہے " انتہى

ديكھيں: مجموع فتاوى ابن باز ( 22 / 178 ).

مزيد استفادہ كے ليے آپ سوال نمبر ( 104777 ) كے جواب كا مطالعہ ضرور كريں.

واللہ اعلم .

الاسلام سوال وجواب
Create Comments