بدھ 24 صفر 1441 - 23 اکتوبر 2019
اردو

گھر میں میت کی تصویر محفوظ کرنا

118116

تاریخ اشاعت : 13-02-2015

مشاہدات : 2499

سوال

سوال: گھر میں میت کی تصویر لٹکانا کیا حرام ہے؟ اور کیا فوت شدگان کی تصاویر جمع کرنا، اور انہیں محفوظ کرنا حرام یا نہیں؟

جواب کا متن

الحمد للہ:

گھروں میں یا کسی اور جگہ ذی روح اشیاء کی تصاویر آویزاں کرنا جائز نہیں ہے، چاہے یہ ذی روح اشیاء ابھی زندہ ہوں یا مر چکی ہوں، تصاویر لگانے کا مقصد یاد  دہانی ہو یا کچھ اور ؛ کیونکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم  نے علی رضی اللہ عنہ کو فرمایا تھا: (کسی بھی تصویر کو مٹائے بغیر مت چھوڑنا ، اور نہ کسی قبر کو برابر کئے بغیر اونچا نہ رہنے دینا) اس حدیث کو مسلم نے اپنی صحیح میں روایت کیا ہے۔ اسکے علاوہ اور بھی بہت سے دلائل ہیں۔
اللہ تعالی ہی توفیق دینے والا ہے، اللہ تعالی ہمارے نبی محمد ، آپکی آل، اور صحابہ کرام پر رحمتیں، اور سلامتی نازل فرمائے" انتہی
دائمی کمیٹی برائے فتوی و علمی تحقیقات

شيخ عبد العزيز بن عبد الله بن باز ، شيخ عبد الرزاق عفيفی ، شيخ عبد الله بن قعود .

ماخذ: الاسلام سوال و جواب

تاثرات بھیجیں