منگل 16 رمضان 1440 - 21 مئی 2019
اردو

رات كو ناخن تراشنے اور پھينكنے سے قبل بسم اللہ پڑھنے كا حكم

11993

تاریخ اشاعت : 02-02-2007

مشاہدات : 5345

سوال

مجھے بعض لوگوں سے معلوم ہوا ہے كہ رات كے وقت ناخن تراشنے حرام ہيں، اسى طرح يہ بھى معلوم ہوا ہے كہ پھينكنے سے قبل ہم ان پر تين بار تھو تھو كر كے بسم اللہ پڑھيں، تا كہ انہيں شيطان اٹھا كر استعمال نہ كرے ؟

جواب کا متن

الحمد للہ:

يہ كہنا كہ رات كے وقت ناخن تراشنے مكروہ ہيں اس كى كوئى دليل اور اصل نہيں ملتى، بلكہ رات يا دن كے وقت جب چاہے ناخن كاٹے جا سكتے ہيں، اس ميں كوئى حرج والى بات نہيں.

اور اسى طرح انہيں پھينكنے سے قبل تين بار بسم اللہ پڑھنا وگرنہ اسے شيطان استعمال كرينگے، اس كى بھى كوئى اصل اور دليل نہيں ملتى اور اسى طرح ناخن دفن كرنے كى بھى كوئى دليل اور اصل نہيں ہے، بلكہ جس حديث ميں اس كا ذكر ملتا ہے وہ بہت ہى زيادہ ضعيف ہے.

چنانچہ انہيں كوڑے دان ميں پھينكنا يا پھر انہيں اس خدشہ كے پيش نظر دفن كرنا جائز ہے كہ كہيں يہ ناخن كسى جادوگر كے ہاتھ نہ لگ جائيں اس ليے وہاں پھينكے جائيں جہاں سے جادوگروں كے ہاتھ نہ لگيں.

واللہ اعلم .

ماخذ: الشيخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں