جمعرات 17 ربیع الاول 1441 - 14 نومبر 2019
اردو

باتھ ٹب ميں پيشاب كرنا

سوال

كيا غسل كرتے وقت باتھ ٹب ميں پيشاب كرنا حديث نہى ميں شامل ہوتا ہے كہ انسان غسل كرنے والى جگہ پر پيشاب نہ كرے، يا كہ پانى كا نكاس ہونے كى بنا پر يہ اس ميں شامل نہيں ہوتا ؟

جواب کا متن

الحمد للہ:

ہم نے يہ سوال فضيلۃ الشيخ محمد صالح العثيمين رحمہ اللہ كے سامنے پيش كيا تو ان كا جواب تھا:

نہيں، يہ اس ميں داخل نہيں ہوتا، كيونكہ جب وہ پيشاب كريگا تو اس پر پانى بہائےگا تو وہ پيشاب وہاں سے زائل ہو جائيگا، ليكن اسے اس وقت تك غسل نہيں كرنا چاہيے جب تك پانى بہا كر وہاں سے پيشاب دور نہ كر لے.

سوال:

يہ پيشاب دوران غسل كيا جائے تو؟

جواب:

عادتا پيشاب كسى اور جگہ كيا جاتا ہے، ليكن فرض كريں اگر انسان كو غسل كرتے ہوئے پيشاب آ جائے تو وہ غسل كرنا ترك كر دے اور پہلے پيشاب كر كے اس پر پانى بہائے...

واللہ اعلم .

ماخذ: الشيخ محمد بن صالح العثيمين

تاثرات بھیجیں