جمعرات 16 جمادی ثانیہ 1440 - 21 فروری 2019
اردو

كام نہ ہونے كى صورت ميں ملازم كا سونا

40509

تاریخ اشاعت : 12-01-2011

مشاہدات : 4137

سوال

ميں اشياء مرمت كرنے كا كام كرتا ہوں، بعض اوقات ہمارے پاس كام نہيں ہوتا، اور ميرے كچھ دوست ميرے پاس ہوتے ہيں، تو كيا ميں كچھ دير كے ليے ارام كر سكتا ہوں، يعنى دوستوں كى موجودگى ميں كچھ دير كے ليے سو جاؤں، اور اگر كوئى كام آئے تو وہ مجھے بيدار كرديں، اور اس سے كام ميں بھى كوئى خلل پيدا نہ ہو ؟

جواب کا متن

الحمد للہ :

اگر كام كا مالك اسے جانتا ہے، اور اسے تم پر كوئى اعتراض نہ ہو تو اس ميں كوئى حرج نہيں، اور اگر اس كے علم ميں نہيں تو پھر افضل اور بہتر يہى ہے كہ آپ اسے بتا ديں تا كہ كسى قسم كا كوئى حرج اور اشكال باقى نہ رہے، كيونكہ آپ اس كے پاس مزدور شمار ہوتے ہيں، اس ليے آپ كا وقت اس كى ملكيت ہے.

واللہ اعلم .

ماخذ: الاسلام سوال و جواب

تاثرات بھیجیں