اتوار 15 جمادی اولی 1440 - 20 جنوری 2019
اردو

کیا بے نماز خاوند سے اپنے آپ کوروک لے

5281

تاریخ اشاعت : 11-07-2004

مشاہدات : 4784

سوال

کیا خاوند یا پھر بیوی کے لیے ممکن ہے کہ وہ اپنے آپ کوبے نماز سے روک لے یعنی وہ اسے اپنے قریب نہ آنے دے ؟
دوسرے معنوں میں کیا یہ جائز ہے کہ دونوں میں سے جب ایک بے نماز ہو تودوسرا اسے اپنے سے ہم بستری نہ کرنے دے ؟

جواب کا متن

الحمدللہ

بلکہ عورت پر واجب ہے کہ وہ اس معاشرت سے اپنے آپ کوروک لے اوراسی طرح مرد پر بھی واجب ہے ۔

کیونکہ اللہ تعالی کا فرمان ہے :

تم کافرعورتوں کی ناموس اپنے قبضہ میں نہ رکھو الممتحنۃ ( 10 ) ۔

توکسی بھی مسلمان عورت کے لیے جائز نہیں کہ وہ کلی طور پربے نماز خاوند کی عصمت میں رہے یا پھر غالباوہ نماز پڑھتا ہی نہ ہو ، بلکہ اس پر یہ ضروری ہے کہ وہ اس سے علیحدگي اختیار کرے اوراس کے ساتھ باقی نہ رہے ۔

کیونکہ وہ کافر ہے اورمخرج عن الملۃ ہے ، ہم اللہ تعالی سے سلامتی وعافیت کے طلبگار ہیں ۔

واللہ اعلم.

ماخذ: الشیخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں