جمعہ 17 ذو القعدہ 1440 - 19 جولائی 2019
اردو

عورت كى پيشانى پر بنديا لگانا

894

تاریخ اشاعت : 11-07-2009

مشاہدات : 4185

سوال

ميں ايك سكول بنانے كى كوشش ميں ہوں اور آپ اس سلسلہ ميں ميرا تعاون كريں، سوال يہ ہے كہ آيا عورت كے ماتھے پر بنديا كا نشان مسلمان ہونے كى علامت ہے، اور اگر واقعى ايسا ہى ہے تو كس طرح ؟

جواب کا متن

الحمد للہ:

بعض عورتيں اپنى پيشانى پر بنديا لگاتى ہيں خاص كر برصغير كى عورتيں، يہ ايسى چيز ہے جس كا اسلام سے بالكل كوئى تعلق نہيں بلكہ يہ اس قوم كى عادت اور رسم و رواج ميں سے ہے.

بعض لوگوں نے ہميں بتايا ہے كہ يہ شادى شدہ عورت ہونے كى علامت ہے، اور يہ بھى كہا جاتا ہے كہ يہ ہندؤوں كى عادت اور رسم ہے جن كى تقليد كرتے ہوئے برصغير كے باقى علاقوں كى عورتيں بھى لگاتى ہيں.

اللہ تعالى سے دعا ہے كہ وہ حق كى ہدايت نصيب فرمائے.

واللہ اعلم .

ماخذ: الشیخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں