جمعرات 10 ربیع الثانی 1442 - 26 نومبر 2020
اردو

مرتدہونے کے بعد ایک نصرانی سے شادی کرلی اوردوبارہ اسلام قبول کرکے نصرانی کوچھوڑ دیا تو اس کی عدت کیا ہوگی

10833

تاریخ اشاعت : 19-09-2003

مشاہدات : 5650

سوال

اسلام سے مرتدہونے کے بعد ایک عورت نے نصرانی سےشادی کرلی اوربعد میں اسلام کی طرف لوٹنے کے بعد نصرانی کوچھوڑ دیا تواس عورت کی عدت کتنی ہوگی تا کہ کسی دوسرے شخص سے شادی کرسکے ؟

جواب کا متن

الحمد للہ.


ہم نے مندرجہ بالا سوال فضیلۃ الشيخ محمد بن صالح عثیمین رحمہ اللہ تعالی کے سامنے پیش کیا توان کا جواب تھا :

سوال : کیا اس کے ساتھ مجامعت کی ہے ؟

جواب : جی ہاں اس عورت کے ساتھ مجامعت کی ہے ۔

فضیلۃ الشیخ کا جواب : - راجح قول کے مطابق – اس کی عدت ایک حیض ہوگی ، اورایک قول یہ بھی ہے کہ وہ تین حیض عدت گزارے لیکن راجح قول یہی ہے کہ وہ ایک حیض ہی گزارے گی ، اس لیے کہ اس کا نصرانی سے شادی کرنا صحیح تھا کیونکہ وہ خود بھی اسلام سے مرتد ہوچکی تھی ۔ .

ماخذ: الشيخ محمد بن صالح العثيمين