سوموار 2 ربیع الثانی 1440 - 10 دسمبر 2018
اردو

لڑکی ایک شخص سے اندر ہی اندر محبت کرتی اوراس سے شادی کی دعا کرتی ہے

1431

تاریخ اشاعت : 16-08-2003

مشاہدات : 6726

سوال

کیا یہ غلط ہے کہ کوئي لڑکی کسی شخص سے اپنے دل میں محبت رکھے اوراللہ تعالی سے دعا کرتی رہے کہ اس سے شادی ہوجاۓ ؟

جواب کا متن

الحمد للہ
جب یہ محبت اسے اللہ تعالی کی محبت سے غافل نہ کرے اوراس میں کوئي حرام کام شامل نہ ہو مثلا اس سے بات چیت اورملاقات وغیرہ جوکہ حرام ہیں توپھر ان شاء اللہ اس محبت جوکہ صرف اس نے اپنے دل میں ہی رکھی ہے اس میں کوئي حرج نہيں ۔

اوراس میں بھی کوئي حرج نہيں کہ وہ اللہ تعالی کےسے یہ دعا کرتی رہے کہ وہ اس کے نصیب میں کردے لیکن شرط یہ ہے کہ جب وہ شخص مسلمان اور اس کے اعمال بھی صحیح ہوں وہ اسلام کا التزام کرتا ہو اوراسے اللہ تعالی کا ڈر اورخوف ہو ۔

واللہ اعلم .

ماخذ: الشیخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں