اتوار 15 جمادی اولی 1440 - 20 جنوری 2019
اردو

نماز باجماعت ادا كرتے وقت زمين پر سجدہ نہيں كر سكتا

21967

تاریخ اشاعت : 26-12-2006

مشاہدات : 4347

سوال

مجھے گھٹنوں ميں تكليف ہے، چنانچہ ميں بہت مشكل كے ساتھ گھٹنے دوھرے كرتا ہوں، اور جب نماز باجماعت ادا كروں تو صف ميں تنگى ہونے كى بنا پر زمين پر سجدہ نہيں كر سكتا، كيونكہ اس كے ليے مجھے بہت زيادہ حركت كرنا پڑتى ہے، اس ليے مجھے مجبورا ہوا ميں ہى سجدہ كرنا پڑتا ہے، اور جب ميں اكيلا نماز ادا كروں تو سات اعضاء كے ساتھ زمين پر سجدہ كرنا ممكن ہوتا ہے، ميرا سوال يہ ہے كہ كيا ميں مسجد ميں نماز باجماعت ادا كيا كروں، يا كہ گھر ميں اكيلا نماز ادا كر لوں ؟

جواب کا متن

الحمد للہ:

آپ مسجد ميں نماز باجماعت ادا كريں، كيونكہ نماز باجماعت ادا كرنا فرض ہے، اور حسب استطاعت سجدہ كريں، چاہے اشارہ كے ساتھ ہى.

اور اس حالت ميں آپ سجدہ ترك كرنے والے شمار نہيں ہونگے.

شيخ عبد الرحمن البراك نے ہميں يہى جواب ديا ہے، جو بالمعنى بيان كر ديا گيا ہے.

واللہ اعلم .

ماخذ: الشیخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں