منگل 23 صفر 1441 - 22 اکتوبر 2019
اردو

كيا احرام كى چادريں تبديل كرنا جائز ہيں ؟

سوال

ميں دوران حج منى ميں سويا ہوا تھا تو مجھے احتلام ہو گيا، اور جب بيدار ہوا تو غسل كر كے اپنا احرام تبديل كر ليا، كيا ميرا يہ فعل صحيح تھا، اور كيا ميرا حج صحيح ہے ؟

جواب کا متن

الحمد للہ:

جى ہاں محرم شخص كے ليے احرام كا لباس تبديل كرنا جائز ہے، اس كے متعلق سوال نمبر ( 26722 ) كے جواب ميں مستقل فتوى كميٹى كا فتوى بيان ہو چكا ہے، آپ اس كا مطالعہ كر ليں، ذيل ميں اس كے متعلق ہم شيخ ابن عثيمين رحمہ اللہ كا فتوى بھى نقل كر ديتے ہيں:

شيخ ابن عثيمين رحمہ اللہ تعالى كا كہنا ہے:

" حج اور عمرہ ميں محرم شخص كے ليے چاہے وہ مرد ہو يا عورت وہ احرام كا لباس تبديل كرنا جائز ہے جس ميں اس نے احرام كى ابتدا كى تھى، اور وہ دوسرا احرام زيب تن كر سكتا ہے ليكن شرط يہ ہے كہ وہ لباس حالت احرام ميں زيت تن كيے جانے والے لباس ميں سے ہو "

ديكھيں: المنھج لمريد العمرۃ والحج الفائدۃ الخامسۃ.

واللہ اعلم .

ماخذ: الاسلام سوال و جواب

تاثرات بھیجیں