ہفتہ 17 ربیع الثانی 1441 - 14 دسمبر 2019
اردو

محرم کے بغیر عورت کا سفر

4523

تاریخ اشاعت : 04-05-2004

مشاہدات : 9159

سوال

مجھے علم ہے کہ عورت کے لیےایک دن اور رات کا سفرمحرم کے بغیر کرنا حرام ہے ، کیا عورت کے لیے جائز ہے کہ اسے جہاز تک محرم پہنچا آئے اورجہاز سے اترتے وقت دوسرا محرم اسے لے آئے ؟
یہ سارا سفردس گھنٹے میں ہوگا

جواب کا متن

الحمدللہ

عورت کے لیے بغیرمحرم کے سفرکرنا جائز نہيں اس کی دلیل نبی صلی اللہ علیہ وسلم کےمندرجہ ذیل فرمان کا عموم ہے :

( اللہ تعالی اورآخرت کے دن پرایمان رکھنے والی عورت کےلیے محرم کے بغیرسفرکرنا حلال نہيں ) ۔

اورمحرم کی موجودگی کا ھدف اورمقصد عورت کی حفاظت اوردیکھ بھال اوراس کےمعاملہ کونپٹانا ہے اورخاص کرجب کوئي نقصان دینے والے معاملات پیدا ہوجائيں ، اورسفرتواس سے بھرا پڑا ہے اس میں مدت کونہيں دیکھا جائےگا بلکہ لوگ جسے سفر کہتے ہیں وہ اسی طرح ہے ، اوراس وقت اس پرسفرکے احکامات لاگو ہونگے ۔

آپ محارم کے احکام کی مزید تفصیل دیکھنے کےلیے سوال نمبر ( 5538 ) کے جواب کا مطالعہ ضرور کریں ۔

واللہ اعلم .

ماخذ: الشيخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں