جمعرات 16 ذو القعدہ 1440 - 18 جولائی 2019
اردو

کیا ہرسال شوال کے چھ روزے رکھنے لازم ہيں ؟

سوال

ایک شخص شوال کے چھ روزے رکھتا رہا لیکن کسی ایک برس وہ مرض یا سستی یا کسی اورمانع کی وجہ سے روزے نہ رکھ سکا توکیا وہ گنہگار ہوگا ، ہم یہ سنتے رہتے ہيں کہ جو ایک برس رکھ لے اس پرواجب ہے کہ وہ روزے رکھنے نہ چھوڑے ؟

جواب کا متن

الحمد للہ
عید الفطر کے بعد شوال میں چھ روزے رکھنے سنت ہیں ، اورجوایک بار رکھے اس پر واجب نہيں کہ وہ مستقل طورپر ہر سال رکھے ، اورکسی ایک سال روزے نہ رکھنے سے گنہگار نہیں ہوگا ۔

اللہ تعالی ہی توفیق بخشنے والا ہے اللہ تعالی ہمارے نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم اوران کی آل اورصحابہ کرام پر اپنی رحمتیں نازل فرمائے ۔

واللہ اعلم .

ماخذ: دیکھیں فتاوی لجنۃ الدائمۃ ( 10 / 391 ) ۔

تاثرات بھیجیں