منگل 21 ذو القعدہ 1440 - 23 جولائی 2019
اردو

رمضان میں روزے کی حالت میں جلدی پٹیاں باندھنے کا حکم

سوال

میں سگریٹ نوشی پر بہت ہی حریص ہوں اور دن میں تقریبا بیس سگریٹ پیتا ہوں میرا ارادہ ہے کہ میں کلی طور پر سگریٹ نوشی سے باز آجاؤں اور اسے ترک کر دوں تو بعض دوستوں نے مجھے کہا ہے کہ آپ نیکوٹین کی پٹیاں استعمال کریں جو کہ اس کے لۓ بہت ہی مفید ہیں ۔
تو میرا سوال ہے کہ کیا میرے لۓ یہ ممکن ہے کہ میں رمضان میں روزے کے درمیان یہ نیکوٹین کی پٹیاں استعمال کر لوں جب کہ یہ پٹیاں جلد پر باندھی جاتی ہے اور اس میں ٹیکوٹین جلدی مساموں کے ذریعے جسم میں داخل ہو جاتی ہے اور یہ ایک پٹی چوبیس گھنٹے کے لۓ کافی ہے اور صرف سات پٹیوں کے استعمال کی ضرورت ہے ۔
اور میں آپ کو یہ بھی بتا دینا چاہتا ہوں کہ مجھے روزے کی حالت میں سگریٹ نوشی کی بالکل ضرورت محسوس نہیں ہوتی لیکن جیسے ہی روزہ افطار کرتا ہوں محسوس کرتا ہوں کہ ہاتھ خود بخود سگریٹ پکڑنے کی کوشش کرتے ہیں میں آپ سے گزارش کرتا ہوں کہ آپ مجھے کوئی نصیحت فرمائیں ۔

جواب کا متن

الحمد للہ :

جلد کے چوسنے والی چیزیں روزہ نہیں توڑتیں مثلا تیل اور مرہم اور جلدی علاج کی وہ پٹیاں جن پر کمیائی مادہ یا دوائی لگی ہوتی ہے مثلا سگریٹ نوشی کا علاج کرنے کے لۓ استعمال ہونے والی پٹیاں اور آپ کو یہ نصیحت ہے کہ آپ اپنے جسم کے متعلق اللہ تعالی سے ڈریں اور اسے اس سگریٹ نوشی کے ساتھ نقصان نہ دیں جو کہ شرعی طور پر حرام ہے ۔

نبی مکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمان ہے :

( اور بیشک آپ کے جسم کا بھی آپ پر حق ہے )

اور ہم اللہ تعالی سے دعا گو ہیں کہ وہ آپ کا اس گندی بیماری کو ترک کرنے میں تعاون فرمآئے اور ہمیں اور آپ کو ہر برائی سے محفوظ رکھے ۔

اللہ تبارک وتعالی نبی صلی اللہ علیہ وسلم پر رحمتیں نازل فرمآئے ۔

واللہ تعالی اعلم .

ماخذ: الشیخ محمد صالح المنجد

تاثرات بھیجیں