منگل 5 جمادی اولی 1444 - 29 نومبر 2022
اردو

اگر امام كى نماز باطل ہو جائے تو كيا وہ كسى كو اپنا نائب بنا دے ؟

سوال

اگر دوران نماز امام كو كوئى مسئلہ درپيش ہو تو كيا وہ كسى مقتدى كو اپنا نائب بنا سكتا ہے تا كہ مقتديوں كى نماز مكمل كراسكے ؟

جواب کا متن

الحمد للہ.

جب امام كا وضوء ٹوٹ جائے يا كچھ اور پيش آجائے اور وہ نماز سے نكل جائے تو اسے يہ حق ہے كہ وہ كسى مقتدى كو كہے: يا فلاں آگے آكر انہيں نماز پڑھاؤ، اور اگر وہ ايسا نہيں كرتا تو مقتديوں كو حق ہے كہ ان ميں سے كوئى ايك آگے آكر نماز مكمل كروائے، يا پھر وہ انفرادى طور پر نماز مكمل كر ليں.

ماخذ: ديكھيں: لقاء الباب المفتوح لابن عثيمين ( 54 / 93 )